صفحہ اول   لفظ اشاریہ   اردو سے توروالی    ہمارے متعلق    رائے دہی

ہمارے متعلق
توروالی زبان

توروالی زبان، شمالی پاکستان کے ضلع سوات کی تحصیل بحرین میں بولی جانے والی ایک قدیم زبان ہے۔ اس کے بولنے والوں کی تعداد ایک لاکھ سے زیادہ ہے ۔ یہ ہندآریائی زبانوں کے ذیلی گروہ'درد' سے تعلق رکھتی ہے۔ مقامی طور پر توروالی لوگ "کوہستانی" کہلاتے ہیں۔ اس زبان میں پانچ اصوات ایسی ہیں جو پشتو اور اردو میں موجود نہیں ہیں۔ان آوازوں کے لئے عربی کے ترمیم شدہ حروف وضع کئے گئے ہیں۔ لسانی اعتبار سے یہ گاؤری اور انڈس کوہستانی کے قریب ہے۔

لغت کے متعلق

اس لغت میں آٹھ ہزار توروالی الفاظ ہیں جن کی درجہ بندی، اردو میں معانی کے علاوہ ان کے اجزائے کلام کی بنیاد پر کی گئی ہے۔ اس میں اردو سے توروالی فرہنگ کی سہولت بھی موجود ہے۔ اس میں ضرب الامثال اور روزمرہ ومحاوروں کے علاوہ توروالی قبائل ، رسوم اور رواج اور جگہوں کے بھی دیئے گئے ہیں۔ پودوں اور درختوں کے ناموں کے ساتھ ان کے سائنسی نام بھی درج ہیں۔ بعض الفاظ کے ساتھ ان کے ثقافتی اور تاریخی پس منظر کی وضاحت کی گئی ہے اور جہاں کہیں ابہام کا امکان تھا،وہاں مزید وضاحت کے لئے انہیں مثالی جملوں میں استعمال کیا گیا ہے۔

ہمارے متعلق

لغت کی تالیف کا کام توروالی برادری سے تعلق رکھنے والے لسانی ماہرجناب انعام اللہ نے 1996 ء میں آغاز کیا۔ انہوں نے اپنی برادری کےلوگوں کی مدد سےاس کام کے لئے ابتداء میں انڈکس کارڈوں اور بعد ازاں کمپیوٹر پروگرام ٹول باکس اور لیگزیک پرو کا استعمال کیا۔شروعات میں بعض مغربی ماہرین لسانیات نے انفرادی طور پر ان کی مدد کی لیکن جلد ہی ان کا رابطہ شکاگو یونیورسٹی میں لسانی ماہر محترمہ ڈاکٹر الینا بشیر سےہوا۔ بعد ازاں نیشنل جیوگرافک نے انہیں لغوی مواد کی تکمیل اور نظرثانی کےلئے ایک گرانٹ کی منظوری دی۔ مئی 2010 ء میں لغت کا توروالی-اردو حصہ IDRC کے تعاون سے پین لوکلائزیشن پراجیکٹ کے تحت نیشنل یونیورسٹی سے طبع ہوا۔ جس کے بیشتر نسخے توروالی برادری میں بلاقیمت تقسیم کیے گئے۔

زیر نظر آن لائن توروالی ڈکشنری کا کامIDRC کینیڈا ہی کے مالی تعاون سے پین لوکلائزیشن پراجیکٹ کے تحت مرکز تحقیقات لسانیات (سینٹر فار لینگویج انجنیئرنگ) واقع الخوارزمی انسٹیٹیوٹ آف کمپیوٹر سائنس، یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی ، لاہور میں پایہ تکمیل کو پہنچا۔

ہدیہ ِ تشکر: اس ویب سائٹ کا سرنامہ، محترم زبیر توروالی صاحب نے تخلیق کیا جس پر ادارہ ان کا ممنون ہے۔